menu icon

پولیس کا صحافیوں پر تشدد کیوں؟ ایس ایچ او کے ساتھ کیا ہوگیا ؟ صحافی نے اصل حقائق سے پردہ اٹھا دیا ..

پولیس نے لانگ مارچ کی کوریچ کرنے والے اے آر وائی نیوز اور دیگر میڈیا نمائندوں کو تشدد کا نشانہ بنایا
web desk dharti ویب ڈیسک


ڈیلی دھرتی (ویب ڈیسک) تفصیلات کے مطابق کامونکی میں پولیس نے اے آر وائی نیوز اور دیگر میڈیا نمائندوں پر تشدد کیا۔

ایس ایچ اوکی موجودگی میں میڈیا نمائندوں پر تشدد کیا گیا،کیمرہ توڑ دیا اور بیٹری نکال لی۔

پولیس اور میڈیا نمائندوں کے درمیان تلخی گاڑیاں پارک کرنے پر ہوئی، صحافی نے بتایا کہ پولیس نے دھکا دیا تو دیگرنمائندوں نے فوٹیج بنائی جس پر زدو کوب کیا گیا۔

جس کے بعد کامونکی میں نجی چینل کے صحافیوں پر پولیس تشدد کے معاملے پر مشیر داخلہ پنجاب عمر سرفراز چیمہ نے بتایا کہ متعلقہ ایس ایچ او کو معطل کر کے انکوائری شروع کر دی گئی ہے۔

مشیر داخلہ پنجاب کا کہنا تھا کہ ابتدائی رپورٹ کے مطابق گاڑی ہٹانے کے معاملے پر تلخ کلامی ہوئی۔

کامونکی میں پی ٹی آئی کے حقیقی آزادی مارچ کی کوریج کے دوران پولیس اور صحافیوں کے درمیان جھگڑا ہوگیا۔

پولیس اہلکاروں نے نجی ٹی وی چینلز کے صحافیوں پر تشدد کیا جبکہ پولیس اہلکاروں نے کیمرہ توڑدیا۔

دوسری جانب حقیقی آزادی مارچ میں پولیس کے صحافیوں پر تشدد کے معاملے پر وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی نے سخت نوٹس لے لیا۔

وزیراعلی پنجاب نے ذمہ دار پولیس افسران کے خلاف کارروائی کا حکم دے دیااور ہدایت کی ہے کہ تشدد میں ملوث ایس ایچ او کو معطل کردیا گیا ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الہٰی نے کہا کہ صحافیوں پر تشدد قابل قبول نہیں۔

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز،انگلش ٹیم پہلی اننگز میں کتنے رنز بنائے.؟











تجارت

گوگل پلے اسٹور کی سروسز پاکستان میں بند ہونگی یا نہیں ؟ فیصلہ ہوگیا











دلچسپ

” میرا دل یہ پُکارے آجا ” مسٹربین بھی اسی بُخار میں مبتلا












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں