menu icon

شاہین فورس اہلکار قتل معاملہ ،

عامر نے خرم کے ساتھ اپنے بیوی اور بچوں کو دبئی بھیجا ہے
web desk dharti ویب ڈیسک


ڈیلی دھرتی (ویب ڈیسک) تفصیلات کے مطابق ملزم خرم نے برادر نسبتی عامر کو واقعے کی اطلاع دی، ملزم عامر خرم نثار کے ہمراہ ایئرپورٹ گیا، عامر نے خرم کے ساتھ اپنے بیوی اور بچوں کو دبئی بھیجا ہے کراچی کی انسداد دہشتگردی منتظم عدالت میں شاہین فورس کے اہلکار عبدالرحمان کے قتل کے مقدمے کی سماعت ہوئی، پولیس نے ملزم خرم نثار کے برادرنسبتی عامر اور ڈرائیور اورنگزیب کو عدالت میں پیش کیا۔پولیس نے ابتدائی تفتیشی رپورٹ بھی عدالت میں پیش کی، جس میں انکشاف کیا گیا کہ اکیس اوربائیس نومبر کی درمیانی شب ملزم خرم نثار نے ڈرائیوراورنگزیب کوکال کی، ڈرائیور نے تفتیش میں قتل کی اطلاع ملنے اور شواہد چھپانے کا اعتراف کیا۔

 

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ملزم خرم نثار نے ڈرائیور کو ایئرپورٹ بلایا اور ڈرایئور کو بتایا کہ میں نے پولیس اہلکارکو قتل کیا ہے، ملزم خرم کی ہدایت پر ڈرایئور نے گاڑی سے اسلحہ اور نمبر پلیٹ نکال کر چھپا دی، ڈرایئور کی نشاندہی پرملزم خرم کے کمرے سے اسلحہ اور نمبر پلیٹ برآمد کرلی ہے۔

 

رپورٹ میں بتایا گیا کہ ڈرایئور کے خلاف سندھ آرمز ایکٹ کی دفعات کے تحت علیحدہ مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ عدالت نے دونوں ملزمان کوتیس نومبر تک جسمانی ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر پولیس سے پیش رفت رپورٹ طلب کرلی۔

 

کیس کا پس منظر

 

کراچی کے علاقے ڈیفنس فیز فائیومیں نامعلوم کار سوار ملزم کی فائرنگ سے شاہین فورس کا اہلکار جاں بحق ہوگیا، پولیس نے ملزم کا سراغ لگا کر کار اور اسلحہ برآمد کرلیا جبکہ ملزم تاحال گرفتار نہیں ہوسکا۔

 

ایس ایس پی ساؤتھ اسد رضا کے مطابق مقتول اہلکار کی شناخت عبدالرحمان کے نام سے ہوئی ہے، مقتول شاہین فورس میں تعینات تھا۔

 

ابتدائی اطلاعات کے مطابق کار سوار شخص مبینہ طور پر کسی خاتون کو اغواء کرنا چاہتا تھا، اسی دوران پولیس اہلکار موقع پر پہنچ گئے، خاتون گاڑی سے اتر کر فرار ہوگئی، اہلکار تفتیش کے لئے ملزم کو تھانے منتقل کرنا چاہتے تھے۔

 

ایک اہلکار کار سوار کے ساتھ گاڑی میں موجود تھا، اسی دوران دونوں کے درمیان تلخ کلامی ہوئی جس پر نامعلوم کار سوار نے فائرنگ کردی، جس سے کار میں موجود اہلکار جاں بحق ہوگیا جبکہ ملزم اہلکار کی لاش چھوڑ کر فرار ہوگیا۔

 

جس پر ملزم نے جواب دیا کہ میرا لائسنس والا اسلحہ ہے، میں چاہوں تو نکالوں نہ چاہوں تو نہ نکالوں۔

 

پولیس اہلکار ملزم کو حکم دیتا ہے کہ گاڑی میں بیٹھو اور چلو۔ تو ملزم نے جواب دیا کہ آپ کو جہاں لے جانا ہے مجھے بتائیں میں خود جاؤں گا۔

 

تلخ کلامی کے بعد مسلح شخص نے فائرنگ کردی۔

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پاکستان کو جیت کے لئے کتنے رنز کا ہدف مل گیا ؟











تجارت

مرغی کے گوشت کی قیمتیں 1000 تک پہنچنے کا خدشہ ،











دلچسپ

دی لیجنڈ آف مولا جٹ ،ہمسایہ ملک میں دھوم مچانے کو تیار












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں