menu icon

دعا زہرہ کے والد ڈٹ گئے، سپریم کورٹ بھی جانا پڑا تو جاؤں گا، بیان سامنے آ گیا

کراچی سے لاپتہ ہونے والی دعا زہرہ کے والد کا کہنا ہے کہ وہ کیس کو بند نہیں کریں گے بلکہ سپریم کورٹ بھی جانا پڑا تو جائیں گے۔ سندھ
web desk dharti ویب ڈیسک


کراچی سے لاپتہ ہونے والی دعا زہرہ کے والد کا کہنا ہے کہ وہ کیس کو بند نہیں کریں گے بلکہ سپریم کورٹ بھی جانا پڑا تو جائیں گے۔

سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کے بعد ردعمل دیتے ہوئے دعا زہرہ کے والد کا کہنا تھا کہ میری بچی 51 دن تک دور رہی ہے۔ نہ جانے انہوں نے اس کی کون سی ویڈیوز بنائی ہیں کہ مجھ سے ملنے بھی نہیں دیا گیا۔ میری بیٹی کو پریشرائز کیا گیا ہے۔ اسے ہم سے ملنے بھی نہیں دیا گیا۔ پولیس تعاون نہیں کر رہی۔

دعا زہرہ کے والد کا مزید کہنا تھا کہ دنیا کو کوئی قانون بچوں کو والدین سے ملنے سے نہیں روکتا۔ اپنی بچی کے لیے سپریم کورٹ بھی جانا پڑا تو جاؤں گا۔


واضح رہے کہ سندھ ہائیکورٹ کے حکم پر دعا زہرہ کی عمر کا تعین کر لیا گیا ہے۔ میڈیکل ٹیسٹ کے مطابق دعا زہرہ کی عمر 16 سے 17 سال ہے۔

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پرتگال کے کرسٹیانو رونالڈو نے ٹیم کو چھوڑ دیا؟











تجارت

ڈالر کو پر لگ گئے ، قیمت میں مزید اضافہ











دلچسپ

عمران خان سے محبت کا انوکھا انداز ، متوالے نے کتنے فِٹ لمبا بلا تیارکرلیا ؟












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں