menu icon

بم دھماکے میں مرنے والوں کی تعداد کتنی ہوگئ کس برادری کو نشانہ بنایا گیا

خودکش بمبار نے جمعہ کو کابل کے ایک نجی تعلیمی کے ہال میں خواتین کے ساتھ خود کو دھماکے سے اڑا لیا، جو تاریخی طور پر ہزارہ برادری کے لیے ایک جھٹکا ہے
web desk dharti ویب ڈیسک


ڈیلی دھرتی (ویب ڈیسک) افغانستان میں اقوام متحدہ کے مشن نے پیر کو کہا کہ افغان دارالحکومت میں گزشتہ ہفتے ایک تعلیمی مرکز پر خودکش بم حملے میں مرنے والوں کی تعداد کم از کم 19 ہو گئی ہے درجنون زخمی ہوئے جس میں نوجوان خواتین سب سے زیادہ متاثر ہوئیں،

اقوام متحدہ کے مشن نے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ہلاکتوں میں مزید اضافے کا خدشہ ہے بمبار نے دھماکہ اس وقت کیا جب یونیورسٹی میں داخلے کے لیے داخلے کے امتحان سے قبل سینکڑوں طلبہ پریکٹس ٹیسٹ میں بیٹھے تھے۔

ابھی تک کسی گروپ نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے، لیکن داعش نے اس علاقے میں لڑکیوں، اسکولوں اور مساجد کو نشانہ بناتے ہوئے کئی مہلک حملے کیے ہیں

طالبان حکام نے اب تک کہا ہے کہ حملے میں 25 افراد ہلاک اور 33 زخمی ہوئے ہیں۔

گزشتہ سال افغانستان میں طالبان کی اقتدار میں واپسی نے مغربی حمایت یافتہ حکومت کے خلاف دو دہائیوں پر محیط جنگ کا خاتمہ کیا اور تشدد میں نمایاں کمی کا باعث بنی، لیکن حالیہ مہینوں میں سکیورٹی ابتر ہونا شروع ہو گئی ہے۔

اسلام پسند سخت گیر، جن پر اقلیتوں کے تحفظ میں ناکامی کا الزام ہے، نے اکثر اپنی حکومت کو چیلنج کرنے والے حملوں کو کم کرنے کی کوشش کی ہے۔

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز،انگلش ٹیم پہلی اننگز میں کتنے رنز بنائے.؟











تجارت

گوگل پلے اسٹور کی سروسز پاکستان میں بند ہونگی یا نہیں ؟ فیصلہ ہوگیا











دلچسپ

” میرا دل یہ پُکارے آجا ” مسٹربین بھی اسی بُخار میں مبتلا












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں