menu icon

عمران خان کو جنرل عاصم منیر پسند ہیں یا نہیں ؟

صدرِ مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے جنرل عاصم منیر کی بطور چیف آف آرمی اسٹاف تقرری کی سمری پر دستخط کردئے
web desk dharti ویب ڈیسک
عمران خان


ڈیلی دھرتی (ویب ڈیسک) تفصیلات کے مطابق عام تاثر یہ پایا جاتا ہے کہ عمران خان، جنرل عاصم منیر کو پسند نہیں کرتے اور اس حوالے سے اب پی ٹی آئی کے سابق رہنما علیم خان کی ایک پرانی غیر تصدیق شدہ آڈیو لیک دوبارہ سوشل میڈیا پر وائرل ہورہی ہے جس میں عمران خان کی اس ناپسندیدگی کی وجہ بیان کی گئی ہے۔ جنرل عاصم منیر کو ستمبر 2018 میں لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر پروموٹ کیا گیا تھا اور بعد میں انہیں ڈی جی انٹر سروسز انٹلیجنس (آئی ایس آئی) مقرر کیا گیا

 

عمران خان نے بطور وزیراعظم اپنے دورِ اقتدار میں جنرل عاصم منیر کو ڈی جی آئی ایس آئی مقرر کیا، لیکن پھر چھ ماہ بعد ہی انہیں عہدے سے ہٹا دیا گیا اور ان کی جگہ جنرل فیض حمید کو حساس ادارے کا سربراہ بنا دیا گیا۔

 

عہدوں کی اس تبدیلی پر کافی چہ مگوئیاں ہوئیں جن میں یہ بھی کہا گیا کہ جنرل عاصم منیر نے بنی گالہ اور ان کے اہلِ خانہ کے حوالے سے مبینہ کرپشن کے کچھ ثبوت اس امید میں عمران خان کو فراہم کئے کہ وہ کوئی ایکشن لیں گے، لیکن عمران خان نے مبینہ طور پر انہیں ہی عہدے سے ہٹا دیا۔

 

اس بات کا ذکر علیم خان کی مبینہ لیک آڈیو میں بھی کیا گیا ہے، علیم خان کہتے ہیں کہ ”فرح بی بی کی زریعے جو رشوت لی گئی ہے پنجاب میں اور جو ان کی بیگم کو سیٹ ملے ہیں ملک ریاض صاحب سے، آپ کے تو سارے دوست آرمی میں موجود ہیں پرانے، ذرا ان سے پوچھیں کہ جنرل عاصم کو جو نکالا گیا تھا کس بات پر نکالا تھا، کیونکہ جنرل عاصم نے جا کے عمران خان کو بتایا تھا کہ آپ کے گھر میں سیٹ آیا ہے رشوت کا جو کہ ملک ریاض صاحب نے بھیجا ہے۔ اور اس کے بعد ان کو، جنرل عاصم کو ڈی جی آئی ایس آئی سے ہٹا دیا گیا تھا کیونکہ انہوں نے اِس کو کہا تھا ’یو آر کراسنگ دی لمٹس‘۔ جنرل عاصم تو آپ کے بیچ میٹ ہوں گے یا آپ کے بالکل قریبی ہوں گے، ذرا ان سے پوچھیں یہ بات ٹھیک ہے یا نہیں۔“

 

 

اسی حوالے سے سینئیر صحافی اور تجزیہ کار اوریا مقبول جان کہتے ہیں کہ “ عمران خان صاحب کے بارے میں یہ کہا جاتا ہے کہ اُن (جنرل عاصم منیر) کے ساتھ ان کا ذاتی قسم کا کوئی مسئلہ ہوا تھا، اور وہ ہوا تھا کہ ان کو آئی ایس آئی سے انہوں نے نکلوایا تھا باجوہ صاحب کو کہہ کر۔“

 

 

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ”ضروری نہیں کہ ان کو عمران خان نے نکالا ہو، ہوسکتا ہے ان کو باجوہ نے آئی ایس آئی سے آؤٹ کر کے اپنے ایک کانفیڈنٹی (قابلِ بھروسہ) کو لے کر آئے ہوں اور وہ تھے جنرل فیض۔“

رپورٹ (آج نیوز ڈاٹ کام)

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پنڈی ٹیسٹ کا دوسرا روز،انگلش ٹیم پہلی اننگز میں کتنے رنز بنائے.؟











تجارت

گوگل پلے اسٹور کی سروسز پاکستان میں بند ہونگی یا نہیں ؟ فیصلہ ہوگیا











دلچسپ

” میرا دل یہ پُکارے آجا ” مسٹربین بھی اسی بُخار میں مبتلا












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں