menu icon

قومی شناختی کارڈ کے اجراء کیلئے ڈی این اے ٹیسٹ ،

قرارداد پارلیمانی سیکرٹری بشریٰ رند نے پیش کی
web desk dharti ویب ڈیسک


ڈیلی دھرتی (ویب ڈیسک) تفصیلات کے مطابق بلوچستان میں قومی شناختی کارڈ کے اجراء کیلئے ڈی این اے ٹیسٹ لازمی قرار دینے کی قرارداد پر شہریوں نے قانون سازوں کو ہی آڑے ہاتھوں لے لیا۔

گزشتہ روز بلوچستان اسمبلی کے اجلاس میں نادرا کی جانب سے شناختی کارڈ کے اجراء کے لئے ڈی این اے ٹیسٹ کو لازمی قراردینے کے حوالے سے قرارداد پارلیمانی سیکرٹری بشریٰ رند نے پیش کی تھی جسے بحث کے بعد منظور کرلی گئی۔

اراکین اسمبلی نے قومی شناختی کارڈ میں ڈی این اے ٹیسٹ کو لازمی تو قرار دیا لیکن یہ بات بھول گئے کہ صوبے میں ڈی این اے ٹیسٹ کی سہولت موجود ہی نہیں۔

شہری کوئٹہ کے باسیوں کا موقف ہے کہ ایوان میں بیٹھے اراکین اسمبلی عوام کی بہتری کے لئے قراردادیں تو پاس کرتے ہیں لیکن اگر اراکینِ اسمبلی کو ہی اس صوبے میں صحت کی سہولیات کا علم نہیں تو ایسے میں عوام کی بہتری کا اقدامات کیسے کیے جاسکتے ہیں

متعلقہ خبریں









مزید

کھیل

پرتگال کے کرسٹیانو رونالڈو نے ٹیم کو چھوڑ دیا؟











تجارت

پاکستان کا ڈیفالٹ رسک کس سطح پر پہنچ گیا ہے ؟











دلچسپ

” میرا دل یہ پُکارے آجا ” مسٹربین بھی اسی بُخار میں مبتلا












وڈیوز

وڈیوز

افواجِ پاکستان کی قربانیوں پر قوم کے جذبات

وڈیوز

غربت اور بیماری میں بچوں کی پرورش کرتی باہمت خاتون

وڈیوز

ابھی نندن پرکلی کی مزاحیہ نظم


لاہور میں باپ کی بیٹی سے نکاح کی خواہش

فارن فنڈنگ کیس : خان صاحب انصاف کے لیے عوام میں نکل آئے

جشن آزادی پر محرم الحرام کے احترام میں کاروبار میں مندی کا رجحان

چیل گوشت کا صدقہ دینا حلال ہے یا حرام ؟

بجلی کے بل دیکھ کر عوام کی چیخیں نکل گئیں

محبت کی شادی کا خوفناک انجام


مزید دیکھیں